اے قائد اعظم تیرا احسان ہے تیرا احسان (ڈاکٹرحسن وارثی)

قائد اعظم محمد علی جناح 25 دسمبر 1876 بروز پیر صبح صادق کراچی میں پیدا ہوئے سندھ کی درسگاہ سندھ مدرستہ الاسلام میں داخل ہوئے بعد ازاں لندن کی مشہور درسگاہ لنکنز ان میں داخلہ لیا یہاں دنیا کے مشہور قانون سازوں میں حضرت محمد صلی اللہ ھو واآلہ وسلم کا نام مبارک سب سے بلند دیکھ کر یہیں پڑھنے کا ارادہ کیا اور 1896 میں بمبئی ہائی کورٹ سے وکالت کی پریکٹس شروع کی اور کامیاب وکیل کہلائے دسمبر 1906 میں کلکتہ میں منعقدہ کانگرس کے سالانہ اجلاس میں شرکت کی کانگhassan-warsiرس سے وابستگی پر جلد ہی آپ کو احساس ہوا کہ کانگرس رام راج چاہتی ہے وہ دوبارہ لندن چلے گئے اور پھر علامہ اقبال اور لیاقت علی خان کے اصرار پر ایک بار پھر ہندوستان تشریف لائے۔1929 میں چودہ نکات پیش کئے اور 1934 میں مسلم لیگی دھڑوں کو اکٹھا کیا۔اپنی جرات اور بہادری کی بناپر برطانوی سامراج کی مرکزی وزارت کو ٹھوکر ماری اور سر کا خطاب لینے سے انکار کر دیا۔چنیہ والا باغ میں مسلمانوں کے قتل عام کے خلاف بطور احتجاج سینٹرل اسمبلی کی رکنیت ٹھکرا دی۔1947 کے ایک جلسے میں جب چند لرگوں نے انہیں شہنشاہ پاکستان کہا تو سخت ناراض ہوئے اور فرمایا میں پاکستان کا شہنشاہ نہیں ایک ادنی سپاہی ہوں قرارداد پاکستان کے سات سال بعد انکا خون جگر رنگ لایا اور پیارا پاکستان وجود میں آیا۔آپ پاکستان بننے کے بعد 13 ماہ زندہ رہے اور تایخ کی سب سے بڑی ہجرت جھیلی ۔بستر مرگ پر فاطمہ جناح کے سامنے غنودگی سے آنکھیں کھولیں اور سرگوشی میں یہ آخری الفاظ ادت کئے ۔ فاطی خدا حافظ”لا الہ الاﷲٌ محمد رسول ﷲ″ قائد اعظم کی نماز جنازہ علامہ شبیر احمد عثمانی نے پڑھائی وہ عالم دین اور عظیم اسکالر تھے۔اس زمانے کے کئی بڑے بڑے مذہبی اسکا لر قائد اعظم کے مخالف تھے۔شبیر احمد عثمانی سے سوال کیا گیا آپ نے قائد اعظم کی نماز جنازہ کیوں پڑھائی تو وہیں جنازہ پر کھڑے ہو کر وہ خطاب کرتے ہیں کہ جب قائد اعظم کا انتقال ہوا تو رات خواب میں میں نے حضور کی زیارت فرمائی۔انکے ساتھ قائد اعظم کھڑے تھے آپ انکے کندھے پر ہاتھ رکھ کر اور مجھے مخاطب کر کے اور انکی طرف اشارہ کر کے کہتے ہیں کہ یہ میرا مجاہد ہے۔اللہ سے دعا ہے کے مرد مجاہد اور ہمارے محسن محمد علی جناح کو جنت الفردوس میں اعلی مقام عطا کرے۔ (آمین ثم آمین)
Pin It

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *